• You have 1 new Private Message Attention Guest, if you are not a member of Urdu Tehzeb, you have 1 new private message waiting, to view it you must fill out this form.

    + Reply to Thread
    + Post New Thread
    Results 1 to 3 of 3

    Thread: جاتا ہوں جدھر، سب کی اُٹھے ہے اُدھر انگشت

    1. #1
      Administrator Admin intelligent086's Avatar
      Join Date
      May 2014
      Location
      لاہور،پاکستان
      Posts
      38,411
      Threads
      12102
      Thanks
      8,638
      Thanked 6,947 Times in 6,473 Posts
      Mentioned
      4324 Post(s)
      Tagged
      3289 Thread(s)
      Rep Power
      10

      جاتا ہوں جدھر، سب کی اُٹھے ہے اُدھر انگشت



      جاتا ہوں جدھر، سب کی اُٹھے ہے اُدھر انگشت

      یک دست جہاں مجھ سے پھرا ہے ، مگر انگشت
      کافی ہے نشانی، ترا چھلّے کا نہ دینا
      خالی مجھے دکھلا کے ، بوقت سفر، انگشت
      خوں دل میں جو میر ے نہیں باقی، تو پھر اس کی
      جوں ماہی بے آب، تڑپتی ہے ہر انگشت
      افسوس! کہ دنداں کا کیا رزق فلک نے
      جن لوگوں کی تھی، درخورِ عقدِ گہر، انگشت
      لکھتا ہوں ، اسد! سوزشِ دل سے سخنِ گرم
      تا رکھ نہ سکے کوئی، مرے حرف پر، انگشت

      32



      قیس بھاگا، شہر سے شرمندہ ہو کر، سوئے دشت
      بن گیا، تقلید سے میری، یہ سودائی عبث

      33



      Similar Threads:

    2. #2
      Star Member www.urdutehzeb.com/public_html Dr Danish's Avatar
      Join Date
      Aug 2015
      Posts
      3,237
      Threads
      0
      Thanks
      211
      Thanked 657 Times in 407 Posts
      Mentioned
      28 Post(s)
      Tagged
      1020 Thread(s)
      Rep Power
      506

      Re: جاتا ہوں جدھر، سب کی اُٹھے ہے اُدھر انگشت

      Quote Originally Posted by intelligent086 View Post


      جاتا ہوں جدھر، سب کی اُٹھے ہے اُدھر انگشت

      یک دست جہاں مجھ سے پھرا ہے ، مگر انگشت
      کافی ہے نشانی، ترا چھلّے کا نہ دینا
      خالی مجھے دکھلا کے ، بوقت سفر، انگشت
      خوں دل میں جو میر ے نہیں باقی، تو پھر اس کی
      جوں ماہی بے آب، تڑپتی ہے ہر انگشت
      افسوس! کہ دنداں کا کیا رزق فلک نے
      جن لوگوں کی تھی، درخورِ عقدِ گہر، انگشت
      لکھتا ہوں ، اسد! سوزشِ دل سے سخنِ گرم
      تا رکھ نہ سکے کوئی، مرے حرف پر، انگشت

      32



      قیس بھاگا، شہر سے شرمندہ ہو کر، سوئے دشت
      بن گیا، تقلید سے میری، یہ سودائی عبث

      33
      Umda intekhab
      Khoobsurat Sharing


    3. #3
      Administrator Admin intelligent086's Avatar
      Join Date
      May 2014
      Location
      لاہور،پاکستان
      Posts
      38,411
      Threads
      12102
      Thanks
      8,638
      Thanked 6,947 Times in 6,473 Posts
      Mentioned
      4324 Post(s)
      Tagged
      3289 Thread(s)
      Rep Power
      10

      Re: جاتا ہوں جدھر، سب کی اُٹھے ہے اُدھر انگشت

      Quote Originally Posted by Dr Danish View Post
      Umda intekhab
      Khoobsurat Sharing
      پسند اور آراء کا بہت بہت شکریہ



      کہتے ہیں فرشتے کہ دل آویز ہے مومن
      حوروں کو شکایت ہے کم آمیز ہے مومن

    + Reply to Thread
    + Post New Thread

    Thread Information

    Users Browsing this Thread

    There are currently 1 users browsing this thread. (0 members and 1 guests)

    Visitors found this page by searching for:

    Nobody landed on this page from a search engine, yet!
    SEO Blog

    User Tag List

    Posting Permissions

    • You may not post new threads
    • You may not post replies
    • You may not post attachments
    • You may not edit your posts
    •